پنجاب کے تھانوں میں موبائل لے جانے پر پابندی عائد

راولپنڈی: صوبہ پنجاب کے تھانوں میں شہریوں پر تشدد کے واقعات میں بڑے پیمانے پر اضافہ ہونے پر ملک بھر میں تشویش پائی جاتی ہے تاہم یکے بعد دیگرے واقعات کی ویڈیوز منظر عام پر آنے کے بعد پولیس اسٹیشنز میں موبائل فون لے کر جانے پر پابندی عائد کر دی گئی ہے .

سی پی او راولپنڈی کی جانب سے جاری کی گئی ہدایات پر فوری طور پر تھانوں میں سمارٹ فونز کے استعمال پر پابندی عائد کی گئی یے۔

پابندی کے بعد تمام تھانوں میں ایس ایچ او اور محرر کے علاہ کوئی بھی سرکاری ملازم موبائل فون استعمال نہیں کر سکیں گے جبکہ تھانوں میں جانے والے سائلین کے بھی سمارٹ فونز گیٹ ڈیوٹی پر تعینات اہلکار کے پاس جمع کروائے جائیں گے جس کے بعد سائیلین کو تھانہ کے اندر جانے کی اجازت دی جائے گی۔

واضح رہے کہ راولپنڈی کے تھانہ گجر خان میں پولیس تشدد سے الیاس بٹ نامی شہری کی ہلاکت اور رحیم یار خان میں صلاح الدین پر پولیس تشدد کی ویڈیوز منظر عام پر آنے کے بعد سمارٹ فونز تھانوں میں لے کر جانے پر پابندی عائد کی گئی ہے۔

شہریوں اور انسانی حقوق کی تنظیموں نے اس فیصلے پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ پولیس اس طرح مظالم کو چھپانے کی کوشش کر رہی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں