خالد جاوید خان کو نیا اٹارنی جنرل مقرر کردیا گیا

aiksath.com.pk

اسلام آباد:خالد جاوید خان کو نیا اٹارنی جنرل مقرر کردیا گیا اس ضمن میں وزارت قانون وانصاف نے باقاعدہ نوٹیفکیشن جاری کردیا ۔ہفتہ کو وزارت قانون کی طرف سے جاری نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ صدر مملکت کی طرف سے خالد جاوید خان کو فوری طور پر اٹارنی جنرل مقرر کردیا گیا ہے جن کا رتبہ وفاقی وزیر کے برابر ہوگا۔

واضح رہے کہ انور منصورخان کے استعفے کے بعد خالد جاوید خان کو نیا اٹارنی جنرل مقرر کرنے کا اصولی فیصلہ کر لیا گیا تھا لیکن جمعہ کو وزیر اعظم عمران خان کی طرف سے منظوری کے باوجود تقرری کا نوٹیفکیشن جاری نہیں ہوسکا تھا۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ خالد جاوید اس سے پہلے بھی اٹارنی جنرل کے فرائض سرانجام دے چکے ہیں جبکہ ایڈووکیٹ جنرل سندھ کے طور پر بھی کام کر چکے ہیں۔ صدارتی ریفرنس کیخلاف جسٹس قاضی فائز عیسی اور دیگر کی درخواستوں کی سماعت کے دوران منگل کو اٹارنی جنرل انور منصور خان نے دلائل دیتے ہوئے بینچ کے کچھ ججوں پر جانبداری کا الزام عائد کیا تھا اور موقف اپنایا  تھا کہ کچھ ججوں نے پٹیشن مرتب کرنے میں جسٹس قاضی فائز عیسی کی معاونت کی۔ اٹارنی جنرل کا یہ بھی کہنا تھا کہ یہ بینچ جسٹس قاضی فائز عیسی کی مرضی کا ہے لیکن وہ اس پر اعتراض نہیں کریں گے۔

سپریم کورٹ کے رد عمل کے بعد اٹارنی جنرل انور منصور خان نے بیان واپس لیا تھا تاہم اگلے دن بدھ کو جب دوبارہ سماعت ہوئی تو عدالت نے اٹارنی جنرل کو پچھلے روز کے الزامات کے حق میں ثبوت پیش کرنے کی ہدایت کی اور قرار دیا کہ ثبوت نہ ہو تو اٹارنی جنرل تحریری معافی مانگے جبکہ عدالت کی طرف سے سخت نوٹس لینے کے بعد پاکستان بار کونسل اور سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن نے بھی اٹارنی جنرل کے موقف پر تنقید کی اور ان سے استعفی طلب کیا تھا۔

اٹارنی جنرل نے جمعرات کو اپنا استعفی صدر مملکت کو بھیجا تھا جس میں کہا گیا تھا کہ بار کے مطالبے پر وہ مستعفی ہورہے ہیں لیکن چئیر مین ایسٹ ریکوری یونٹ  شہزاد اکبر نے دعوی کیا تھا کہ حکومت نے ان سے استعفی مانگا تھا۔