حلیب فیکٹری میں ساڑھے بارہ کروڑ کی گیس چوری پکڑی گئی

aiksath.com.pk

بھائی پھیرو :محکمہ سوئی گیس کے افسران نے ایک فیکٹری میں ساڑھے بارہ کروڑ کی گیس چوری پکڑ کر دو مقدمات درج کرا دیے۔صنعتی علاقہ میں با اثر فیکٹری مالکان اور افراد ملازمین کی ملی بھگت سے جعلی میٹر لگا کر اور میٹروں میں ہیرا پھیری کرکے اربوں کی گیس چوری کر رہے ہیں ۔

عوامی سماجی حلقوں کی طرف سے سب کو پکڑنے کا مطالبہ ۔تفصیلات کے مطابق بھائی پھیرو اور گردونواح میں محکمہ سوئی گیس کے ملازمین کی ملی بھگت سے کرپٹ مافیا نے جعلی کنکشن لگوا کر اور میٹروں میں ہیرا پھیری کرکے اربوں کی گیس چوری کو معمول بنا رکھا تھا ۔

اس پر محکمہ کے اعلی افسران کی ہدایت پر گزشتہ روز لاہور ریجن نمبر تین کے سپرنٹنڈنٹ آفیسر مقصود اقبال نے محکمہ کے ماہرین کے ہمراہ نواحی حلیب دودھ فیکٹری پر چھاپہ مارا تو وہاں لگے دو گیس میٹروں میں ٹمپرنگ اور ہیرا پھیری کرکے گیس چوری کرتے رنگے ہاتھوں پکڑ لیا۔

محکمہ کی طرف سے تھانہ صدر میں درج کرائی گئی ایف آئی آر کے مطابق فیکٹری کے مالک کاشف اعجاز شیخ نے دونوں میٹروں میں ٹمپرنگ کرکے محکمہ کی ساڑھے بارہ کروڑ روپے کی گیس چوری کرکے محکمہ کو بھاری نقصان پہنچایا۔

یہ امر قابل ذکر ہے کہ بھائی پھیرواور صنعتی علاقہ میں محکمہ سوئی گیس کا کرپٹ عملہ عوام سے رشوت لے کرکروڑوں روپے کی گیس چوری کرواتا ہے ۔اسی طرح سوئی گیس کے محکمہ کے بعض کرپٹ ملازمین کی ملی بھگت سے جعلی ڈیمانڈ نوٹسوں پر جعلی کنکشن لگا کر گیس چوری کی جاتی ہے۔

محکمہ کے ملازمین صحیح ڈیمانڈ نوٹس سرکاری بینکوں میں ادا کرنے والوں کو توسالہا سال تک کنکشن مہیا نہیں کرتے جبکہ دوسری طرف رشوت دینے والوں کو راتوں رات گیس کے جعلی ڈیمانڈ نوٹس جاری کرکے جعلی کنکشن لگا کر گیس چلا دی جاتی ہے سوئی گیس کے ککھ پتی ملازم لکھ پتی بن چکے ہیں ۔

جبکہ حکومت کو کڑوروں روپے کا نقصان پہنچتا ہے۔یہاں کئی دفعہ ایسے جعلی کنکشن لگانے والوں کے خلاف مقدمات بھی درج ہوئے مگر یہ گیس مافیا اتنا طاقتور اور با اثر ہے کہ ہر دفعہ بچ نکلنے میں کامیاب ہو جاتا ہے ۔عوامی سماجی حلقوں نے اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ گیس چوروں کے خلاف کاروائی کر کے کروڑوں روپے کا نقصان پہنچانے والے سرکاری افسران اور چوروں کے خلاف کاروائی کریں