ہر نزلے،زکام کو کورونا وائرس نہ سمجھا جائے،ڈاکٹر ظفر مرزا

aiksath.com.pk

راولپنڈی:وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا  ہے کہ پاکستان میں کورونا کے 5 مریض ہیں تاہم ہر نزلے اور زکام کو کورونا وائرس نہ سمجھا جائے۔

راولپنڈی میں میڈیا سے گفتگو میں  انہوں نے کہا  کہ پاکستان میں کورونا کے 5 مریض ہیں تاہم ہر نزلے اور زکام کو کورونا وائرس نہ سمجھا جائے،  کورونا سے متاثرہ پانچوں مریضوں کی حالت بہتر، وائرس سے نمٹنے کیلئے تیاری مکمل ہے ، صوبے اور وفاق مل کر کام کر رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ  ملک بھر میں 200 سے زائد مشتبہ مریضوں کے کورونا وائرس کے ٹیسٹ ہو چکے ہیں  جبکہ پاکستان میں 5کنفرم کورونا وائرس کے مریض ہیں، بیرون ملک سے آنیوالوں کی سکریننگ کی جا رہی ہے،پاکستان میں کورونا وائرس کے کیس چھپانے کی بات غلط ہے، عوا م بلا ضرورت خوف میں مبتلا نہ ہوں،عوام کو ماسک کے پیچھے بھاگنے کی ضرورت نہیں۔

کورونا وائرس سے محفوظ رہنے کے لیے کچھ ہدایات دیتے ہوئے ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا کہ کورونا وائرس سے بچنے کے لیے ہاتھوں کو بار بار دھوئیں اور ہجوم والی جگہ پر جانے سے گریز کریں۔انہوں نے کہا کہ  وفاقی حکومت نے سکول بند کرنے کا فیصلہ نہیں کیا، نہ ہی ہم نے  سکول بند کرنے کی تجویز دی  ، اسی لیے اسلام آباد اور اس سے ملحقہ علاقوں میں سکول بند نہیں کیے گئے،  صوبائی حکومتیں خودمختار ہیں اور اپنے لوگوں کے لیے بہتر فیصلے کررہی ہیں  ان کے اسکول بند کرنے کے فیصلے پر اعتراض نہیں۔ 

انہوں  نے کہا کہ ڈینگی کے حوالے سے تیاری شروع کردیں، ڈینگی کو اسٹینڈرڈ طریقے سے قابو کریں گے اور ڈینگی کے بارے میں بھی نیشنل پروگرام لا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب اور اسلام آباد میں کورونا کا کوئی مسئلہ نہیں لہذا یہاں کے سکول بند نہیں کر رہے۔ انہوں نے کہا کہ  چین میں کل 2 ہزار طلبہ ہیں جس میں سے ووہان میں 620 طلبہ ہیں اور ان تمام سے رابطہ ہے  جبکہ  چین نے پاکستانیوں کے لیے بھی وہی پابندی لگائی ہیں جو اپنے لوگوں کے لیے لگائی ہے۔