پی بی اے کی درخواست مسترد، پیمرا کو ٹی وی چینل لائسنس کے اجراء کی اجازت

aiksath.com.pk

اسلام آباد: اسلام آباد ہائیکورٹ نے پاکستان براڈکاسٹرز ایسوسی ایشن کی دائر کردہ اپیل کو مسترد کرتے ہوئے پیمرا کو نئے سیٹلائٹ ٹی وی چینل لائسنسز کے اجراء کی اجازت دیدی۔ پیمرا نے 58ٹی وی چینلز کیلئے بولی کا انعقاد 2اور 3مئی 2019ء کو25دسمبر 2018ء کو شائع کردہ اشتہار کی روشنی میں کیا تھا جسے پی بی اے نے اسلام آباد ہائیکورٹ میں چیلنج کیا تھا۔ پاکستان براڈکاسٹرز ایسوسی ایشن نے پیمرا کو نئے لائسنسز کے اجراء سے روکنے کیلئے اسلام آباد ہائیکورٹ میں رِٹ دائر کر رکھی تھی جس میں عدالت ِعالیہ نے مؤرخہ یکم جولائی 2019ء کو اتھارٹی کواحکامات جاری کئے ہیں کہ وہ نئے ٹی وی چینلز کی لائسنسنگ کے عمل کو جاری رکھے۔ پیمرا نے عدالتِ عالیہ کو یقین دہانی کرائی کہ تمام اسٹیک ہولڈرز/لائسنس یافتگان کے حقوق کو آئین اور پیمرا قوانین کے مطابق مکمل تحفظ فراہم کیا جائے گا۔ یاد رہے پیمرا نے سات کیٹیگریز میں58سیٹلائیٹ ٹی وی لائسنسزکے اجراء کیلئے بولی کا انعقاد کیاتھا۔جن میں خبریں وحالاتِ حاضرہ کیلئے 8، تفریح کیلئے 16، کھیلوںکیلئے 5، زراعت کیلئے2، صحت کیلئے4،تعلیم کیلئے 11اور علاقائی زبانوںکیلئے 12لائسنسز شامل ہیں۔اس بولی کا مقصد ڈیجیٹل ڈسٹری بیوشن میڈیم جیساکہ آئی پی ٹی وی ، ڈیجیٹل کیبل اور ڈی ٹی ایچ کی بڑھتی ہوئی مانگ کو پورا کرناہے۔ پیمرا نے2002ء سے ابھی تک 88ٹی وی لائسنسوں کا اجراء کیا ہے جبکہ آنے والی ڈی ٹی ایچ اور ڈیجیٹل ٹیکنالوجی کی کامیابی کیلئے 250ٹی وی چینلزدرکار ہوں گے۔ پیمرا امید کرتا ہے کہ ان ٹی وی چینلز کے آغاز سے ناصرف ملک میںسرمایہ کاری اور روزگار کے مواقع میسر ہوں گے بلکہ عوام کو وسیع پیمانے پر تفریح، تعلیم اور معلومات کے مواقع بھی ملیں گے