کرونا پھیلاؤ کو روکنے سے متعلق پارلیمانی کمیٹی میں 15 سینٹرز شامل

aiksath.com.pk

اسلام آباد:کرونا وبا کے پھیلاؤ کو روکنے سے متعلق پارلیمانی کمیٹی میں 15 سینٹرز شامل ہونگے کمیٹی کے لئے سینیٹ سے اراکین کے نام دینے کے لئے چئرمین سینیٹ محمد صادق سنجرانی اور سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کے درمیان مشاورت ہوئی ۔

اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ کرو نا وائرس کے پیش نظر پیدا ہونے والی صورتحال کا جائزہ لینا اہم ہے۔کرونا وائرس عالمی وبا کی شکل اختیار کر چکا ہے۔کمیٹی صوبوں اور وفاق کی سطح پر معاونت کاری کے عمل کو تیز کرنے میں مدد گار ثابت ہو گی پارلیمانی کمیٹی کے قیام کا مقصد کرونا وائرس سے بچاو کے لیے اقدامات کرنا ہے۔ پارلیمانی کمیٹی اپنی سفارشات اور تجاویز حکومت کو دے گی اور کمیٹی کرونا وائرس سے لڑنے کے لیے حکومتی اقدامات پر بھی نظررکھے گی۔

بیان میں چئرمین سینیٹ نے کہا کہ کرو نا وائرس کے باعث پیدا صورتحال سے معیشت سست روی کا شکار ہو رہی ہے۔حالات کا مقابلہ کرنے اور ایک قومی لائحہ عمل وضع کرنے کمیٹی اہم کردار ادا کرے گی۔چئیرمین سینیٹ نے کرونا وائرس کے حوالے سے پارلیمانی کمیٹی کے لئے نام اسپیکر قومی اسمبلی کو بھجوا دیے ہیں ان میں پارلیمانی لیڈرز اور قائد ایوان اور قائد حزب اختلاف شبلی فراز ، راجہ ظفر الحق ، اعظم سواتی ، مشاہد اللہ خان اور شیری رحمان محمد علی سیف ، حاصل بزنجو ، مولانا غفور حیدری ، عثمان کاکڑ ، سینیٹر سراج الحق ، ستارہ ایاز ، جہانزیب جمال دینی ، مظفر شاہ ، انوار الحق اور سینٹر اورنگزیب کے نام شامل ہیں۔ سینٹ سے پارلیمانی کمیٹی میں سینٹ کی جانب سے تمام پارٹیوں کو نمائندگی دی گئی ہے ۔

چیئرمین سینٹ سے ملاقات کے حوالے اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا ہے کہ پوری قوم کو متحد ہو کر اس وبا سے جنگ لڑنی ہے۔کرونا وائرس سے معاشی طور پر چیلینجز سے نمٹنے کے لیے حکمت عملی بنانی ہوگی۔ انہوں نے قومی اسمبلی اور سینٹ ارکان پر مشتمل پارلیمانی کمیٹی کے قیام کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن اور حکومت کی طرف سے نام آتے ہی پارلیمانی کمیٹی قائم کر دی جائے گی۔

چیئرمین سینیٹ سے ملاقات میں کرونا وائرس سے بچاو اور دیگر اہم امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔اسد قیصر نے کہا ہے کہ پارلیمانی کمیٹی کے قیام کا مقصد کرونا وائرس سے بچاو کے لیے اقدامات کرنا ہے۔ پارلیمانی کمیٹی اپنی سفارشات اور تجاویز حکومت کو دے گی اور کمیٹی کرونا وائرس سے لڑنے کے لیے حکومتی اقدامات پر بھی نظررکھے گی۔

چیئرمین سینیٹ نے کرونا وائرس سے لڑنے کے لیے قائم کی جانے والی پارلیمانی کمیٹی کے اقدام کو سراہتے ہوئے کہا کہ کمیٹی کے قیام کا حکومتی فیصلہ قابل ستائس ہے۔ کورونا وائرس پورے ملک میں پھیلا چکا ہے اس کے پھلا کو روکنے کے لیے سیاسی قیادت کا آپس کے اختلافات کو بھلا کر مشترکہ حکمت عملی واضع کرنا وقت کی اہم ضرورت ہے۔

انہوں نے پیپلز پارٹی کے چیئر مین بلاول بھٹو کے بیان کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ ایسے وقت میں پی پی پی کے چیئر مین کا قومی یکجہتی کا بیان اس عالمی وبا پر قابو پانے میں اہم سنگ میل ثابت ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ اللہ تعالی کی مدد سے پوری سیاسی قیادت مل کر اس وبا کے پھیلا کو روکنے میں کامیاب ہو گی۔

چیئر مین سینٹ کا کہنا تھا کہ احتیاطی تدابیر اختیار کرنا ہماری سماجی ذمہ داری ہے۔ شہری، اراکین پارلیمنٹ ، ملازمین غیر ضروری اجتماعات سے گریز کریں۔