سیاسی گپ شپ،کاروباری امور کیلئے پرول میں توسیع نہیں ملے گی،فردوس عاشق اعوان

aiksath.com.pk

لاہور : معاون خصوصی وزیر اعلیٰ پنجاب ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے گورنر ہاؤس لاہور میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ شہباز شریف کو ماں کی میت پر سیاست کی اجازت نہیں دی جائیگی۔ پرول پر رہائی میں توسیع دینا حکومتی پالیسی میں نہیں۔

انہوں نے کہا کہ شریف خاندان کا کوئی شخص ہو یا عام شہری حکومت قانون کی عملداری یقینی بنائے گی۔ وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے انسانی ہمدردی کی بنیاد پر پہلے ہی 12 گھنٹے کے بجائے 5 دن کا پرول دیا۔ شہباز شریف کو مزید پرول کی درخواست کرنی ہی نہیں چاہئے تھی۔ انکو والدہ کی تدفین اور آخری رسومات میں شرکت کیلئے رہائی دی گئی ہے، سیاسی گپ شپ اور کاروباری امور کیلئے پرول میں توسیع نہیں ملے گی۔

بعد ازاں ڈی جی پی آر آفس میں نیوز کانفرنس کرتے ہوئے ڈاکٹر فردوس نے کہا کہ 40 سال تک عوامی دولت لوٹنے والے اپنی چوری بچانے کیلئے عوام کے غم کا ڈھونگ رچا رہے ہیں۔ عوام کے جان،مال کی محافظ بزدار حکومت چاہتی ہے کہ عقل کی اندھی اپوزیشن ہوش کے ناخن لے اور عوام کی جانوں کیساتھ مزید نا کھیلے۔ سیاست ہوتی رہے گی مگر زندگی کے نقصان کا ازالہ نہیں ہوتا۔

معاون خصوصی وزیر اعلیٰ نے کہا کہ جس شہر میں بھی PDMکا جلسہ ہوا وہاں کورونا تیزی سے پھیلا۔ پی ڈی ایم کے ناکام گٹھ جوڑ نے عدالتی حکم اور کورونا ایس او پیز کی سراسر خلاف ورزی کی. انہوں نے کہا کہ پی ڈی ایم اپنی سیاسی رنگ بازیاں جاری رکھے مگر عوام کی جانوں سے نہ کھیلے۔

معاون خصوصی نے کہا کہ ملتان جلسے میں مریم بی بی کی تقریر کے دوران فیکرٹری میں آگ ن لیگ کے سابق ایم پی اے کی آتش بازی کی وجہ سے لگی۔ فیکرٹری مالک نے ن لیگ کے سابق ایم پی اے شاہد کے خلاف مقدمہ درج کروایا ہے۔ ڈاکٹر فردوس نے کہا کہ مولانا نے اپنے ورکرز کو پولیس پر حملہ کیلئے ڈنڈے تقسیم کئے۔ حکومت نے ان کی سازش کو بھانپتے ہوئے پولیس کو کسی بھی قسم کے تصادم سے دور رہنے کی ہدایت کی۔

انہوں نے کہا کہ پنجاب کے متعدی امراض کی روک تھام کے قانون کی خلاف ورزی پر ملتان جلسہ کے منتظمین کیخلاف ایف آئی آر درج کروائی جائے گی۔ ن لیگ کے 22اور پیپلزپارٹی کے 16 اور جے یو آئی (ف) کے 13 افراد کے علاوہ نامعلوم افراد کو ایف آئی آر میں نامزد کیا گیا ہے